چلو پاکستان…

ساری عمر بیرون ملک گزار کر بہت ڈرپوک ہو گیا ہوں…. جب بھی پاکستان آیا… ہمیشہ ہی ایک انجانا سا خوف میرے دل میں ضرور ہوتا ہے….  ایسا محسوس ہوتا ہے کہ پاکستان میں ہر انسان کرپٹ ہے… مجھے ائر پورٹ سے باہر نکلتے ہی لوٹ لینگے.. شاید قتل کر کے میری لاش کہیں بھی پھینک دینگے… اور مرے گھر والے میرا انتظار ہی کرتے رہ جایئنگے… یہ سوچ ہوتی ہے میری… اور یہ سوچ اور ڈر بہت پرانا ہے… آج کا نہیں ہے… ہر بار ہی ایسا ہوتا ہے…. ائر پورٹ سے میں ہمیشہ ڈرتے ہوے ہی نکلا ہوں… لیکن حقیقت یہ ہے کہ آج تک کوئی تلخ تجربہ ہوا نہیں…

  میرے والد صاحب میرے اور میرے بھائی کے لئے "فارمی چوزے” کا لفظ استمال کرتے ہیں… آرام پسند تو ہر دوسرے نوجوان کی طرح میں ہوں ہی… لیکن شاید دوسروں کی نسبت کچھ حساس بھی زیادہ ہوں اپنے ارد گرد کے ماحول کا…

 اب بچپن سے یہی ہو رہا ہے… چھٹیاں منانی ہیں تو پاکستان چلو… اور جو تھوڑی بہت چھٹیاں ملتی ہی ہیں… وہ کبھی اس شہر میں چاچو جان سے ملنے چلو… کبھی دوسرے شہر میں ماموں جان کی خبر لے آؤ… اورکبھی اس رشتے دار کی شادی ہے تو بارات کے ساتھ پھر سے دوسرے شہر تک کا سفر کرو…  لیکن پھر بھی یہ ساری اکسایٹمنٹ ہی ہے… ایک ایڈونچر ہوتا ہے… جو ہم دوسرے ملک میں نہیں کر سکتے… وہ پاکستان میں کر لیتے ہیں…

کل جب پاکستان پہنچا… تو سوچا کہ اس بار کے اپنے ٹرپ کو ایک دوسری نظر سے دیکھونگا… خوب مشاہدہ کرونگا… اور پھر تجزیہ کرونگا… کہ ہم جو روز میڈیا میں دیکھتے ہیں… اور ان کی رپورٹس پر اپنا مائنڈ سیٹ بنا لیتے ہیں وہ کس حد تک صحیح ہے…

تو سوچا اپنے دس دن کے قیام کی ڈائری لکھوں… ہر چھوٹی چیز محسوس کروں اور اپنے سب دوستوں سے شیئر کروں… تو انشااللہ جلد ہی اپنے محسوسات لے کر دوبارہ حاضر ہونگا………. اب رات کافی ہو گیی ہے… میری بیٹی کافی ڈسٹرب ہو رہی ہے… اس سے پہلے کہ وہ اٹھ کر پھر سے میری طرف دیکھ کر رونا شروع کر دے… آج کے لئے اجازت…  

Advertisements

About عمران اقبال

میں آدمی عام سا۔۔۔ اک قصہ نا تمام سا۔۔۔ نہ لہجہ بے مثال سا۔۔۔ نہ بات میں کمال سا۔۔۔ ہوں دیکھنے میں عام سا۔۔۔ اداسیوں کی شام سا۔۔۔ جیسے اک راز سا۔۔۔ خود سے بے نیاز سا۔۔۔ نہ ماہ جبینوں سے ربط ہے۔۔۔ نہ شہرتوں کا خبط سا۔۔۔ رانجھا، نا قیس ہوں انشا، نا فیض ہوں۔۔۔ میں پیکر اخلاص ہوں۔۔۔ وفا، دعا اور آس ہوں۔۔۔ میں شخص خود شناس ہوں۔۔۔ اب تم ہی کرو فیصلہ۔۔۔ میں آدمی ہوں عام سا۔۔۔ یا پھر بہت ہی “خاص” ہوں۔۔۔ عمران اقبال کی تمام پوسٹیں دیکھیں

4 responses to “چلو پاکستان…

  • احمد عرفان شفقت

    میں یہ نہیں کہتا کہ پاکستان میں سب اچھا ہے اور یہ کہ لوگوں کو یہاں کوئی خوف و خدشات نہیں ہیں لیکن میں یہ ضرور کہوں گا کہ روز مرہ زندگی میں یہاں صورتحال اتنی بھی خراب نہیں ہے جتنی ہمیں لگتی ہے۔ یہ جو ہمیں یہاں کے حالات خوفناک حد تک خراب لگتے ہیں اس کی وجہ میڈیا کی طرف سے کی گئی ہماری مینٹل پروگرامنگ ہے۔ اگر ہم چھ ماہ کے لیے ٹی وی اور اخبارات سے استفادہ کرنا ترک کر دیں تو ہمارا موجودہ مائنڈ سیٹ تبدیل ہو جائے گا انشاءاللہ

  • شازل

    اللہ نہ کرے کہ اپ کے ساتھ کچھ حادثہ ہو بلکہ کسی کے ساتھ بھی ہو۔
    لیکن یہ بھی ہے کہ ہمارے ملک میں کئی قاتل دندناتے پھر رہے ہیں لیکن قانون کو ان سے کوئی غرض نہیں۔
    شاید حالات اس سے بھی آگے جائیں۔ (اللہ نہ کرے)

  • افتخار اجمل بھوپال

    بالکل ۔ براہِ راست معلومات حاصل کيجئے ۔ آپ ديکھيں گے کہ اخبارت ميں اصل سے زيادہ تخيلات ہوتے ہيں

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: