بوجھو تو جانیں

بھائیو… یہ کیا چیز ہے… اسے کیا کہتے ہیں؟ کوئی ہمیں اس کی خصلتیں بتا سکتا ہے…

Advertisements

About عمران اقبال

میں آدمی عام سا۔۔۔ اک قصہ نا تمام سا۔۔۔ نہ لہجہ بے مثال سا۔۔۔ نہ بات میں کمال سا۔۔۔ ہوں دیکھنے میں عام سا۔۔۔ اداسیوں کی شام سا۔۔۔ جیسے اک راز سا۔۔۔ خود سے بے نیاز سا۔۔۔ نہ ماہ جبینوں سے ربط ہے۔۔۔ نہ شہرتوں کا خبط سا۔۔۔ رانجھا، نا قیس ہوں انشا، نا فیض ہوں۔۔۔ میں پیکر اخلاص ہوں۔۔۔ وفا، دعا اور آس ہوں۔۔۔ میں شخص خود شناس ہوں۔۔۔ اب تم ہی کرو فیصلہ۔۔۔ میں آدمی ہوں عام سا۔۔۔ یا پھر بہت ہی “خاص” ہوں۔۔۔ عمران اقبال کی تمام پوسٹیں دیکھیں

7 responses to “بوجھو تو جانیں

  • یاسر خوامخواہ جاپانی

    او بھائی عمران!!
    آپ کو نہیں ملوم یہ جھاڑیوں میں پھنسے والا اور بیگانی شادی میں دیوانہ ہوجانے والا ذبحہ کرکے کھاو تو مزیدار نہیں تو اللہ کی نہایت احمق مخلوق ہے۔
    اللہ میاں دا مشوم بندہ۔ آہو

  • جاوید گوندل ۔ بآرسیلونا ، اسپین

    اسے بارہ سنگھا کہتے ہیں۔ اردو بلاگز پہ جگہ بہ جگہ سینگ بھنسائے نظر آتا ہے۔
    جب تک دنیا میں جھاڑیاں باقی ہیں۔ بارہ شنگھے ان سے شینگ پھنسائے رکھیں۔ ایک کیو ایک کا اعلان۔
    مذید معلومات کے لئیے دیکھئے ۔ بارہ سنگھے کی فریاد
    http://www.dufferistan.com/?p=1132

  • قاسم

    یہ آفت بلاگستان اردو ہے جس سے سب اللہ کی پناہ مانگتے ہیں

  • قاسم

    یہ آفت بلاگستان ہے جس سے سب اللہ کی پناہ مانگتے ہیں

  • علی شاہ

    اس جانور کے جی پچھو شکاری کتے لگے ھو تے ھے :sleepy: :sleepy:

  • Aniqa Naz

    ایک مشورہ دوں، آپ اپنے بلاگ کا نام دائرہ فکر تبدیل کر دیں اور ٹیگ لائن بھی۔
    مناسب نام یہ ہو سکتے ہیں آ عندلیب، اسکا مائخذ یہ شعر ہے۔
    آ عندلیب مل کر کریں آہ و زاریاں
    میں ہائے دل پکاروں تو کہے ہائے دل
    اسکا کوئ بھی مصرعہ آپکی ٹیگ لائن کا کام انجام دے سکتا ہے۔

    • عمران اقبال

      Ms. Aniqa: Thank you for your comment and suggestion… I’ll definately think on those lines about Andaleeb and her "Aah-o-zarian”… by the way… just out of curuosity… can you please tell me that who is this "Andaleeb” and if after using her name, i wont have any copy right problems…. i hope you understand…

      Now coming back to the actual topic, on whose behalf you have written this sarcastic comment… The person or object I referred here is a so called Mufti, who likes to interfere and put the blames on every other person… When he commented on one of my posts, i replied him with complete respect but see below his thread of replies:

      فتخار اجمل بھوپال says:
      January 10, 2011 at 9:54 am (Edit)
      آپ نے زبردست پوسٹ لگائی ہے

      00
      Most Popular Content
      All | Today | This Week | This Month
      () …Rated 2↑ 0↓ (2 Votes)
      …Rated 2↑ 0↓ (2 Votes)
      ! …Rated 1↑ 0↓ (1 Vote)
      CREATE YOUR OWN RATINGRate This
      Reply
      ABDULLAH says:
      January 13, 2011 at 7:05 pm (Edit)
      ان تعریف کرنے والے صاحب کے اس شاعر کے بارے میں دلی تاثرات یہ ہیں !
      اسلئے کہ اس شاعر کے کلام اور عمل ايک دوسرے کی ضد تھے ۔ وہ دہريا ۔ ارسٹوکريٹ اور اکڑی گردن والا شخص تھا جو ملک کے پہلے وزيرِ اعظم کے قتل کی سازش ميں جب جيل گيا تو اسے وطن کی محبت ياد آئی ۔

      00 Rate This
      Reply
      عمران اقبال says:
      January 13, 2011 at 8:56 pm (Edit)
      عبداللہ صاحب۔۔۔ اجمل صاحب نے اس پوسٹ میں شاعر کے بارے میں کچھ نہیں لکھا بلکی صرف اور صرف اس گیت کی تعریف کی ہے۔۔۔۔ شاید آپ کو غلط فہمی ہوگئی ہے۔۔۔

      00 Rate This
      Reply
      ABDULLAH says:
      January 13, 2011 at 11:42 pm (Edit)
      Here is the link now you can see by yourself!
      http://shahi.urdunama.org/?p=324

      00 Rate This
      Reply
      عمران اقبال says:
      January 13, 2011 at 11:54 pm (Edit)
      عبداللہ بھائی۔۔۔ جی میں نے اجمل صاحب کا یہ تبصرہ پہلے بھی پڑھا ہے۔۔۔ اور میری رائے اب بھی یہ ہی ہے کہ اجمل صاحب نے نکتہ چینی شاعر جناب فیض احمد فیض صاحب کے بارے میں کی ہے نا کہ اس نظم پر یا اس کے الفاظ پر۔۔۔

      اب فیض احمد صاحب جیسے بھی انسان ہوں۔۔۔ غور طلب بات صرف یہ ہے کہ چاہے جن بھی حالات میں انہوں نے پاک وطن پاکستان کے لیے اچھے الفاظ استعمال کیے اور ایک اچھی نظم لکھی۔۔۔

      میری اس پوسٹ کا مقصد بھی صرف اور صرف پاکستان کے لیے اتنی خوبصورت لکھی گئی نظم شئیر کرنا تھا۔۔۔ نا کہ فیض صاحب کے بارے میں کچھ لکھنا۔۔

      00 Rate This
      Reply
      ABDULLAH says:
      January 14, 2011 at 12:30 pm (Edit)
      ارے ارے ایسا بھی کیا چھپانا صاف صاف کہیں کہ آپنے یہ نظم ایم کیو ایم الطاف حسین اور مشرف سے اپنا بغض نکالنے کے لیئے لگائی تھی!
      اور آپکے بزرگ نے آپ کی واہ واہ بھی اسی سینس میں کی ہے،
      مجھے بس آپ جیسے لوگوں کی یہی منافقت ہے جو ہضم نہیں ہوتی

      00 Rate This
      Reply
      عمران اقبال says:
      January 14, 2011 at 1:20 pm (Edit)
      عبداللہ بھائی۔۔۔ ویسے تو اب مجھے آپ کے آخری تبصرے کا جواب دینا ہی نہیں چاہیے۔۔۔ لیکن آپ نے مجھے منافق کہا۔۔۔ بالکل صحیح کہا۔۔۔ میں تو خود کو نا صرف منافق، فاسق بلکہ گستاخ رسول اور گستاخ اللہ بھی سمجھتا ہوں۔۔۔ اب اللہ سے دعا یہ ہے کہ اللہ مجھے ان برائیوں سے بچائے۔۔۔

      دوسری بات۔۔۔ آپ نے یہ بات بھی بلکل درست فرمائی کہ یہ نظم الطاف حسین اور مشرف سے بغض نکالنے کے لیے لگائی گئی ہے۔۔۔ بس آپ کچھ اور نام آپ اس لسٹ میں ڈالنا بھول گئے ہیں۔۔۔ تو میں آپ کی آسانی کے لیے شامل کر دیتا ہوں۔۔۔ اس لسٹ میں الطاف حسین، مشرف، نواز شریف، اسفند یار ولی، مولانا فضل الرحمن، قاضی حسین، زرداری اور ان سب کے حواریان بھی ہیں۔۔۔

      جونکہ آپ نہایت ہی سچے، کھرے اور پاکباز انسان ہیں اس لیے آپ سے درخواست ہے کہ آپ اللہ تبارک تعالی سے ہمارے لیے اور ہمارے مسلم امت کے لیے دعا کریں۔۔۔

      00 Rate This

      and the guy or this particular object, with out evening knowing me OR understanding my point of view gave me a title of "Munafiq”… I respected his point of view even then…

      and then on another blog his comments were:

      مران اقبال says:
      January 14, 2011 at 12:47 am
      تحریر اور تبصرے پڑھ کر نہایت افسوس ہوا۔۔۔ پہلی بات یہ کہ بھائیو، کیا ہمارے سیاستدان ہمارے خدا (نعوز باللہ) ہیں جن کے بارے میں آپ حد سے زیادہ پروٹیکٹو ہو رہے ہیں۔۔۔ یارو، اس تحریر کا مقصد جو مجھے سمجھ آیا ہے وہ صرف یہ ہے کہ ہمارے سیاستدان، کرسی اور وزارتیں پانے کے لیے کسی بھی حد سے گزرنے کے لیے تیار ہو جاتے ہیں، اس وقت انہیں اللہ بھی یاد نہیں رہتا۔۔۔ اب وہ چاہے پیپلز پارٹی ہو، مسلم لیگ ن یا ق والے ہوں، ایم کیو ایم ہو، جماعت اسلامی ہو، اے این پی ہو اور یا متحدہ مجلس عمل ہو، سب کا منشور صرف حکومت کرنا ہے۔۔۔ کاغذ پر بڑے بلند بانگ دعوے ہوں گے کہ عوام الناس کا بھی کچھ بھلا کرنا ہے لیکن آپ سب خود سوچ سمجھ کر بتا دیں کہ کیا بھلا کیا ہے ہمارا ان سیاستدانوں نے۔۔۔ براہ مہربانی۔۔۔ اس تحریر کو سمجھنے کی کوشش کریں نا کہ جزباتی ہو کر ایک دوسرے پر کیچڑ اچھالنا شروع کر دیں۔۔۔

      خدارا۔۔۔ اب جماعتوں، زات پات اور فرقوں سے باہر نکلیں۔۔۔ ان چیزوں نے ہمیں تباہیوں کے علاوہ کچھ نہیں دیا۔۔۔ عزت دیں اور عزت لیں پر عمل کریں۔۔۔ اور کسی دوسرے کی نکتہ چینی کو ہنس کر برداشت کریں اور پھر اس سے کچھ نا کچھ سبق حاصل کریں۔۔۔

      عبداللہ بھائی۔۔۔ آپ بلاگ لکھتے ہیں اور پڑھے لکھے انسان ہیں تو براہ مہربانی اپنوں سے بڑوں کے آداب ملحوظ خاطر رکھیں۔۔۔

      افتخار اجمل صاحب نا صرف ہمارے بزرگ ہیں۔۔۔ بلکہ نہایت شائستہ اور علم والے انسان ہیں۔۔۔ ان کی اپنی رائے ہے کچھ معاملوں میں۔۔۔ تو ہمیں ان کی رائے کا احترام کرنا چاہیے۔۔۔ جیسا کہ ہم سب چاہتے ہیں کہ ہمارے رائے کا بھی احترام کیا جائے۔۔۔

      والسلام۔۔۔

      :
      January 14, 2011 at 1:38 pm
      عمران اقبال میں اپنے خاندان کے بڑوں کی عزت کرتا ہوں یا جنہیں پرسنلی جانتا ہوں،باقی اس بلاگنگ میں نہ کوئی میرا چاچا ماما ہے اور نہ میں بنانا پسند کرتا ہوں،یہاں میں صرف ان کی عزت کرتا ہوں جو منافقت سے پاک ہوں خواہ وہ مجھ سے چھوٹے ہوں اور میرے مخالف نظریات ہی کیوں نہ رکھتے ہوں،
      امید ہے بات آپکی سمجھ میں آگئی ہوگی!!!!!!!!!

      Reply
      عمران اقبال says:
      January 14, 2011 at 2:28 pm
      عبداللہ بھائی۔۔۔ (معاف کیجیے گا، میں آپ کو پرسنلی نہیں جانتا تو مجھے آپ کو نا تو بھائی کہنا چاہیے اور نا ہی آپ کی عزت کرنی چاہیے)۔۔۔

      جی تو میں کہ رہا تھا کہ عبداللہ واقعی آپ کا یہاں کوئی ماما چاچا نہیں ہے۔۔۔ اور منافقت کی بات تو آپ کے منہ سے بلکل اچھی نہیں لگتی۔۔۔ میرے خیال میں آپ سے بڑا منافق شاید کوئی اور نا ہو۔۔۔ جو اپنے چوہوں کے دفاع میں تہذیب کا دامن بھی ہاتھ سے چھوڑ بیٹھے ہیں۔۔۔

      اپنی سمجھ پر مجھے اتنا یقین ضرور ہے کہ میں آپ کی طرح نا سمجھ نہیں ہوں۔۔۔

      امید ہے بات آپکی سمجھ میں آگئی ہو گی۔۔۔!!!!!!!

      عمران اقبال says:
      January 14, 2011 at 2:24 pm
      فکر پاکستان: بھائی جان میرا پچھلا کمنٹ آپ کے لیے بلکل نہیں تھا۔۔۔ بلکہ کچھ قارئین کے لیے تھا جو ایک دوسرے پر نکتہ چینی کر رہے تھے۔۔۔ برا مت مانیے گا۔۔۔ آپ کے مضمون سے میں سو فیصد متفق ہوں۔۔۔

      Reply
      ABDULLAH says:
      January 14, 2011 at 3:01 pm
      عمران اقبال آپکی بڑی مہربانی کہ آپنے مجھے بھائی کی تہمت سے آزاد کیا،
      میرے نزدیک یہ بھی ایک بہت بڑی منافقت ہے کہ جسے آپ پسند نہ کریں اسے بھائی جان اور چچا جان بناتے رہیں،
      رہی میرے کسی کے دفاع میں تہذیب کا دامن چھوڑنے کی بات،تو ایسا میں بدتہذیب لوگوں کے ساتھ ہی کرتا ہوں اور کرتا رہوں گا،
      امید ہے یہ بات بھی جناب کی سمجھ میں آگئی ہوگی!!!!!
      اور اگر خبیثوں سے جان چھڑا کر اپنا علاقہ چھوڑ کر نکل جانا چوہا ہونا ہے تو نبی صلی اللہ علیہ وسلم جب مکہ چھوڑ کرمدینہ تشریف لے گئے تھے ان کے اس عمل کو بھی آپ یہی گھٹیا ذہنیت والا گھٹیا نام دیں گے؟؟؟؟؟؟؟

      عمران اقبال says:
      January 14, 2011 at 3:23 pm
      عبداللہ۔۔۔ حد درچہ گھٹیا بات کی ہے آپ نے اور یقین کریں کہ مجھے آپ سے امید بھی یہی تھی۔۔۔ منافقت کی حد کر دی آپ نے۔۔۔ الطاف حسین جیسے ننگ وطن کو آپ کس ہستی سے ملا رہے ہیں۔۔۔ شرم آنی چاہیے آپ کو۔۔۔ حقیقی معنوں میں تو آپ نے توہین رسالت کی ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اللہ آپ کو ہدایت دے۔۔۔ آمین۔۔۔

      آپ چاہے جیسے ہیں مجھ سمیت کسی دوسرے قاری کو اس سے کوئی مطلب نہیں۔۔۔ لیکن میرا مشورہ یہ ہے کہ آپ اپنی سوچ کو شائع کرنے کے لیے اپنا بلاگ بنا لیں اور وہاں آپ نے جو بھی زہر اگلنا ہے۔۔۔ شوق سے اگلیں۔۔۔ دوسروں کے صفحات کو گندہ مت کریں اپنی گھٹیا سوچ سے۔۔۔۔

      پھر سے میری دعا یہی ہے آپ کے لیے ۔۔۔ کہ اللہ آپ کو صحت عطا فرمائے۔۔۔۔ انگریزی میں کہوں گا۔۔۔ Get Well Soon buddy… آپ نہایت ہی کسی خطرناک زہنی بیماری کا شکار ہیں۔۔۔

      کہیں سنا تھا کہ احساس کمتری کے چھپانے کے لیے لوگ احساس برتری کا شکار ہو جاتے ہیں۔۔۔ تو آپ جیسے اخلاقی پسماندہ شخص بھی ایسی ہی اور کسی بڑی زہین بیماری کا شکار ہے۔۔۔ اپنا علاج کروایئں۔۔۔

      میری درخواست ہے “فکر پاکستان” سے۔۔۔ کہ جونکہ “عبداللہ” سے کوئی مفید تبصرے کی امید نہیں۔۔۔ لہذا انہیں بلاک کر دیں۔۔۔ اور یہ ہی ان کے ساتھ میں اپنے بلاگ میں کروگا۔۔۔ ایسے لوگ نام بدل کر پھر آ جائیں گے۔۔۔ کیونکہ یہ ماحول گندا کرنے کا عادی ہیں۔۔۔ اس لیے ان کی طرز بکواس کو سمجھیں اور ان کا کوئی بھی کمنٹ آتے ہیں ڈیلیٹ کر دیں۔۔۔

      والسلام۔۔۔

      Reply
      ABDULLAH says:
      January 14, 2011 at 3:36 pm
      عمران اقبال اور مجھے تم جیسے جاہلوں سے بعینہی یہی امید تھی۔۔۔۔۔۔۔۔۔
      تم جس معاشرے میں پل کر بڑے ہورہے ہو وہاں اپنے عمل کی تو کوئی پرواہ نہیں ہوتی مگر دوسروں پر توہین رسالت کا شوق ایک جنون اور دیوانگی اختیار کرچکا ہے بہتر ہوگا کہ تم اپنے اس پاگل پن سے ہم سب کو محفوظ رکھو،
      تم سے وقار کی پوسٹ پر ایک سوال کیا تھا ایک بار پھر پوچھتا ہون کہ تم نے قرآن پاک کتنی بار بمع ترجمعہ اور تفسیر کے پڑھا ہے اور کونسی صحیح احادیث کی کتب مکمل ختم کی ہیں؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟
      تم جیسے نیم ملا خطرہ ایمان ٹائپ کے لوگوں نے اس ملک کو تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا ہے اور اب بھی تمھیں سکون نہیں،اللہ تم جیسے ذہنی بیماروں سے اس ملک کو پاک کرے آمین ثمہ آمین

      Reply
      ABDULLAH says:
      January 14, 2011 at 3:39 pm
      اور ہاں فکر پاکستان تم سے کہیں زیادہ ذہین اور سمجھدار شخص ہیں انہیں تمھارے مشوروں کی قطعی ضرورت نہیں ہے،کیا سمجھے!
      اور تم بھی جاکر صرف اپنے بلاگ کو گندہ کرو تو بہتر ہوگا!!!!

      Reply
      عمران اقبال says:
      January 14, 2011 at 4:19 pm
      عبداللہ۔۔۔ شکریہ۔۔۔ آپ کی رائے کا احترام کیا جائے گا۔۔۔ اور اگر مجھ میں کوئی خامی ہے تو میں انہیں درست کرنے کی کوشش کروں گا۔۔۔

      والسلام۔۔۔

      Ms. Aniqa: after all this conversation, did you once feel that I am using any bad language or blaming some body for nothing… I used my right of speech and gave my point of view and i understand that some body doesnt think the same but deferring to the thoughts should also be his personal opinion and it shouldnt be on the pages… where this so called "mufti bhai” has been giving the title of "Munafiq” to every other person who doesnt think like him…

      Ms. Aniqa, I respect you and I appreciate your views on your blog… and the same thing I expect from the visitors of my blog… and I have a complete right to block any reader or visitor to comment on my page and thats what i did for this particular guy… and his reply was:

      جہاں تک مجھے علم ہے میرے علاوہ اور کوئی عبداللہ کے نام سے تبصرے نہیں کرتا!
      بارہ سنگھا اور بے سنگھا تو مومن لوگ ہی جانیں!
      البتہ کسی پر بناء سوچے سمجھے الزام لگانابہتان کے زمرے میں آتا ہے یہ آپ کے بزرگوار اکثردوسروں کو نصیحت کرتے رہتے ہیں یہ الگ بات ہے کہ انکا عمل اس کے برخلاف ہی ہوتا ہے،
      اس کے علاوہ تنگ کرنےسے آپکی مراد کیا ہے ذرا اسکی بھی وضاحت کریں مہر بانی ہوگی!
      اور ہاں کم سے کم میں افتخاراجمل کو ہر گز اتنی اہمیت نہیں دیتا کہ اپنے قیمتی وقت میں سے وقت ان صاحب کے ناموں سے الٹے سیدھے تبصرے کرنےمیں ضائع کروں!!!!!
      2011/01/16 at 3:16 pm
      میں نے یہ تبصرہ جناب کے بلاگ پرموڈریشن لگی دیکھ کر میرا پاکستان اور عنیقہ کے بلاگ پر بھی پوسٹ کردیا ہے!!!!
      ویسے سچائی سے یہ خوف تمھارے ایمان کی بہت اچھی طرح وضاحت کرتا ہے!!!!!

      So when the his blaming came turned around him, his opinion was البتہ کسی پر بناء سوچے سمجھے الزام لگانابہتان کے زمرے میں آتا ہے:

      Ms. Aniqa, again I will explain this to you that I have deep respect for each and every blogger as they are a source of my learning and that includes YOU too…

      I am not here to disrespect any one but I have a complete right to defend and fight back…

      I realize that I posted this "post” as a complete humor and have not pointed out at any person yet… apart from my this comment….

      for me, being called as "Baarah Singha” is much better then being knows as "Munafiq”…

      Thank you again and hope to see your valuable comments on my writings…

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: