محبت اب نہیں ہوگی۔۔۔

 

ابھی ہنسنے کو دل چاہے۔۔۔

تو رو دینا۔۔۔

محبت اب نہیں ہوگی۔۔۔

ابھی تم دل کو رہنے دو۔۔۔

ابھی چپ چاپ سہنے دو۔۔۔

ؐمحبت اب نہیں ہوگی۔۔۔

ابھی اشکوں کے ایندھن میں۔۔۔

ہمارے خواب جلتے ہیں۔۔۔

محبت اب نہیں ہوگی۔۔۔

ابھی منزل کہاں کوئی۔۔۔

رہِ برباد میں ہوگی۔۔۔

محبت اب نہیں ہوگی۔۔

یہ کچھ دن بعد میں ہوگی۔۔۔

محبت اب نہیں ہوگی۔۔۔

 

Advertisements

About عمران اقبال

میں آدمی عام سا۔۔۔ اک قصہ نا تمام سا۔۔۔ نہ لہجہ بے مثال سا۔۔۔ نہ بات میں کمال سا۔۔۔ ہوں دیکھنے میں عام سا۔۔۔ اداسیوں کی شام سا۔۔۔ جیسے اک راز سا۔۔۔ خود سے بے نیاز سا۔۔۔ نہ ماہ جبینوں سے ربط ہے۔۔۔ نہ شہرتوں کا خبط سا۔۔۔ رانجھا، نا قیس ہوں انشا، نا فیض ہوں۔۔۔ میں پیکر اخلاص ہوں۔۔۔ وفا، دعا اور آس ہوں۔۔۔ میں شخص خود شناس ہوں۔۔۔ اب تم ہی کرو فیصلہ۔۔۔ میں آدمی ہوں عام سا۔۔۔ یا پھر بہت ہی “خاص” ہوں۔۔۔ عمران اقبال کی تمام پوسٹیں دیکھیں

10 responses to “محبت اب نہیں ہوگی۔۔۔

  • افتخار اجمل بھوپال

    آج کی دنيا ميں محبت ہے ہی کہاں ؟ اور جسے محبت کہا جاتا ہے اس ميں اور دُشمنی ميں فرق کيا ہے ؟

  • وسیم بیگ

    بھائی
    یہ محبت ہوتی کیا ہے
    اپنے مفادات کے لیے کسی کے جذبات سے کھیلنا ؟؟؟؟’
    محبت ہونی بھی نہیں چاہئیے

  • Imran

    افتخار صاحب۔۔۔ محبت ہے تو۔۔۔ لیکن بہت زیادہ شکلوں میں ہے۔۔۔

    وسیم بھائی۔۔۔ مفادات کے لیے کسی کے جذبات سے کھیلنا تو واقعی محبت نہیں ہے۔۔۔ لیکن محبت ایک بڑا خوبصورت جذبہ ہے۔۔۔ بشرطیکہ سجی ہو۔۔۔ محبت ہونی چاھیے ورنہ زندگی میں کیا حسن رہ جائے گا۔۔۔

  • Dr.Jawwad Khan

    ویسے سچی بات تو یہ ہے کہ میں انسانوں کے درمیاں محبت کو آج تک نہیں سمجھ سکا ہوں . جو زیادہ مناسب بات مجھے محبت کے بارے محسوس ہوتی ہے وہ یہ ہے کہ یہ ایک سماجی تعلق ہے جو انسان اپنی ضرورت کو پوری کرنے کے لئے استوار کرتا ہے .ایک کاروباری شراکت داری کی طرح …جس پر شاعر لوگوں نے خواہ مخواہ میں محدب عدسے لگا دیے ہیں..

  • بلاامتیاز

    عمران ۔۔
    میں تو اتنا ہی کہوں گا ۔۔
    ۔
    محبت تب نہیں ہوئی تو اب کیا ہو گی

  • عمران اقبال

    ڈاکٹر جواد صاحب۔۔۔ اب میں کیا کہوں۔۔۔ آپ نے محبت کو کاروباری شراکت کا نام دے دیا۔۔۔ محبت کا معنی بڑا وسیع ہے۔۔۔ ہر انسان کو زندگی میں ساتھ چاہیے اور سچی محبت کا ساتھ مل جائے تو کیا ہی بات۔۔۔ زندگی خوبصورت ہو جاتی ہے۔۔۔۔۔ سچی محبت میں تو نا "میں” ہوں اور نا "تم” ہو۔۔۔ بس "ہم” ہیں۔۔۔

    امتیاز بھائی۔۔۔ محبت اب نہیں ہو گی تو کب ہو گی۔۔۔؟؟؟ کر لو یار۔۔۔ ایک دو محبتیں کھڑکا ہی ڈالیں۔۔۔ میری دعا ہے کہ جس سے محبت ہو آپ کو۔۔۔ اس سے شادی بھی ہو جائے۔۔۔ کچھ دیر کے لیے ہی صحیح، افاقہ ضرور ہو گا۔۔۔ بس عشق سے دور رہیے گا۔۔۔ عشق لاعلاج مرض ہے۔۔۔

  • وسیم بیگ

    بلکل محبت ایک بڑا خوبصورت جذبہ ہے لیکن اگر ماں باپ سے ہو بہن بھائی سے ہو لیکن آج کل تو جیسے ہی محبت کا نام آتا ہے ہمارے دماغ میں لڑکا لڑکی کا ہی خیال آتا ہے اور یہاں پر میں بھی بھائی جواد کی بات پر اتفاق کرتا ہوں ایسی محبت کو میں بھی آج تک نہیں سمجھ پایا بس جو سمجھا وہ یہ ہی کے ایسی محبت میں صرف مفادات ہی زیادہ ہوتے ہیں بہت کم ہی ایسی محبت ہو گی جو حواس اور ذاتی مفاد کی ملاوٹ سے پاک ہو اور جس میں تھوڑی سچائی ہو .اور محبت کی ساری کہانیاں ایک جیسی ہی ہوتی ہیں۔ ایک مرد، ایک عورت اور ان کے مابین ازلی کشش۔ جسے لوگ محبت کا نام دیتے ہیں………………….
    ویسے بھائی عمران یہ عشق میں اور محبت میں کیا فرق ہے ؟؟؟؟؟؟؟؟؟

  • وسیم بیگ

    جی بھائی
    انتظار رہے گا

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: