اے دلِ نادان

Advertisements

About عمران اقبال

میں آدمی عام سا۔۔۔ اک قصہ نا تمام سا۔۔۔ نہ لہجہ بے مثال سا۔۔۔ نہ بات میں کمال سا۔۔۔ ہوں دیکھنے میں عام سا۔۔۔ اداسیوں کی شام سا۔۔۔ جیسے اک راز سا۔۔۔ خود سے بے نیاز سا۔۔۔ نہ ماہ جبینوں سے ربط ہے۔۔۔ نہ شہرتوں کا خبط سا۔۔۔ رانجھا، نا قیس ہوں انشا، نا فیض ہوں۔۔۔ میں پیکر اخلاص ہوں۔۔۔ وفا، دعا اور آس ہوں۔۔۔ میں شخص خود شناس ہوں۔۔۔ اب تم ہی کرو فیصلہ۔۔۔ میں آدمی ہوں عام سا۔۔۔ یا پھر بہت ہی “خاص” ہوں۔۔۔ عمران اقبال کی تمام پوسٹیں دیکھیں

5 responses to “اے دلِ نادان

    • عمران اقبال

      فکرِپاکستان بھائی۔۔۔ شکریہ۔۔۔ لیکن میں اپنے آپ کو ایک عام سا بندہ ہی سمجھتا ہوں۔۔۔ جو عام سوچ رکھتا ہے۔۔۔ میرے بلاگ پر آنے اور تبصرہ کے لیے بہت بہت شکریہ۔۔۔

  • تانیہ رحمان

    بہت خوبصورت بلاگ بنا لیا ۔ بھائی ۔ روز خوب سے خوب تر کی تلاش ۔ ماشا۔اللہ
    اوراے دل نادان ۔۔۔ کی کیا بات ۔۔۔۔ اپنی لکھی ہوئی شاعری نظر نہیں آئی ۔۔۔ کوئی ناراضگی ۔۔خیر کوئی نہیں ۔۔۔۔ یہ تو ہوتا رہتا ہے ۔ خوش رہئے ۔۔

    • عمران اقبال

      تانیہ آپا۔۔۔ بلاگ کی تعریف کا بہت شکریہ۔۔۔ اور "اے دلِ نادان” کو پسند کرنے کا بھی بہت شکریہ۔۔۔

      آپی۔۔۔ آپ کی شاعری اب بھی محفوظ ھے۔۔۔ آج کل کچھ تبدیلیاں کر رہا ہوں بلاگ میں اس لیے وہ کچھ دیر کے لیے غائب ہو گئی ہے۔۔۔ لیکن یقین مانیے کہ جیسے میں نے پہلے کہا تھا کہ آپ کا وہ کلام میرے دل میں ہے۔۔۔ آپ سے ناراضگی کا کوئی سوال ہی نہیں پیدا ہوگا۔۔۔ آپ میری بڑی آپی ہیں۔۔۔ اختلافِ رائے ہو سکتا ہے۔۔۔ لیکن ناراضگی کیوں۔۔۔

      اللہ آپ کو بھی ہمیشہ خوش و خرم رکھے۔۔۔ آپ کا ہاتھ اب کیسا ہے؟؟؟

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: