سگریٹ نوشی صحت کے لیے مضر ہے۔۔۔

بیس سال کا تھا جب سگریٹ نوشی کی شروعات کی۔۔۔ فیشن کے طور پر نہیں بس ایویں۔۔۔ دراصل، نوکری کے سلسلے میں گھر سے دور رہتا تھا۔۔۔ ڈیوٹی کے بعد اپنے کمرے میں بند ہو جاتا تھا اور سوشل زندگی نا ہونے کے برابر تھی۔۔۔ ایسے ہی بیٹھے بیٹھے ایک بار سگریٹ جلا لی۔۔۔ پھر وہ دن اور آج کا دن سگریٹ نوشی نے میرا ساتھ نا چھوڑا۔۔۔ دس سال سے دن کی ایک ڈبی ختم کرنا معمول ہو چکا ہے۔۔۔ گھر والوں نے بہت سمجھایا۔۔۔ لیکن سب کے مشورے ایک کان سے سنے اور دوسرے سے اڑا دیے۔۔۔ شروع میں کہا کرتا تھا کہ جب چاہوں گا سگریٹ چھوڑ دوں گا۔۔۔ لیکن یہ دعویٰ بھی فضول ہی تھا۔۔۔کہ خاک چھوٹتی ہے منہ سے لگی ہوئی۔۔۔ ابو تو غصے میں یہاں تک کہتے کہ سگریٹ پیتاہے تو شراب بھی پیتا ہو گا۔۔۔ مجھے دیکھتے، میرے چھوٹے بھائی نے بھی سگریٹ نوشی شروع کر دی۔۔۔ اور اس کا الزام آج تک میرے سر پر آتا ہے۔۔۔ اور سچ بھی ہے۔۔۔ میں نا پیتا تو شاید وہ بھی نا پیتا۔۔۔

 

ws_Sketch_of_a_smoker_1024x768

اب تیس سال کی عمر میں  کافی عرصہ سے محسوس کر رہا تھا کہ دس قدم چلتے ہی میرا سانس پھول جاتا ہے۔۔۔ تھوڑا سا بھی مشقت کرنے سے اپنی سانس پر قابو رکھنا مشکل ہو جاتا ہے۔۔۔ پسینہ پسینہ ہو جاتا ہوں۔۔۔ توند بھی آہستہ آہستہ آگے کی جانب کھسک رہی ہے۔۔۔ بازوں میں طاقت نہیں رہتی اور ٹانگیں زیادہ بوجھ اٹھا نہیں پا رہی۔۔۔ وزن بھی بڑھتا جا رہا ہے۔۔۔

اب جب یہ ساری علامات آہستہ آہستہ میرے سامنے آئیں تو مجھے کچھ کچھ پریشانی شروع ہو گئی کہ کہیں کوئی بڑا مسئلہ نا ہو جائے۔۔۔ صحت مزید خراب نا ہو جائے۔۔۔ اور میں بھری جوانی میں ہی بڈھا نا ہو جاوں۔۔۔

گھر کے قریب نیا جم کھلا تو سوچا بہت ہو گئی۔۔۔ اب کچھ مشقت کی جائے۔۔۔ شاید طبیعت کچھ سنبھل جائے۔۔۔ اور سٹیمنا بھی بہتر ہو جائے۔۔۔

دو دن جم میں مشقت کے بعد ہی یہ اندازہ ہو گیا ہےکہ میرے جسم میں سگریٹ نوشی نے اپنا وہ زہر چھوڑا ہے جس نے مجھے عمر سے قبل ہی کمزور کر دیا ہے۔۔۔میرے لیے دس منٹ ٹریڈ مل پر جاگنگ کرنا بھی عذاب جان ہو گیا ہے۔۔۔ سائیکلنگ کرنا تو اور مشکل۔۔۔ کہ دو پیڈل چلے نہیں اور سانس پھول گئی اور سارا جسم پسینے سے نہا گیا۔۔۔۔ شرمندگی الگ ہوتی ہے کہ میری ہی عمر والے لوگ بھاگے جا رہے ہیں اور میں۔۔۔ بس دو قدم۔۔۔!!!  گھر کے باہر بچوں کو کھیلتے ہوئے دیکھتا ہوں تو دل چاہتا ہے کہ کاش میرا سٹیمنا بھی ان جیسا ہو جائے۔۔۔

بڑی شد و مد کے بعد اب سوچ لیا ہے کہ سگریٹ نوشی ترک کرنے کا وقت آ گیا ہے۔۔۔ اتنی ہمت تو نہیں ہے مجھ میں کہ یک دم چھوڑ دوں۔۔۔ پلان کے مطابق، روز کی بنیاد پر سگریٹوں کی تعداد میں کمی کرنی ہوگی۔۔۔ اور چاہے جتنا بھی مشکل ہو، جم میں محنت کرنی ہوگی۔۔۔ تاکہ میں اپنی بیٹی کے لیے صحت مند رہ سکوں۔۔۔ کہ میں اس کی خوشیاں دیکھنا چاہتا ہوں۔۔۔

میری گزارش ہے سب سے۔۔۔ کہ سگریٹ نوشی ایک لعنت ہے۔۔۔۔ یہ انسان کی صحت کو کہیں کا نہیں چھوڑتی۔۔۔ اور اندر اندر گھن کی طرح چاٹ جاتی ہے۔۔۔ خدارا اس لعنت سے بچیں۔۔۔

Advertisements

About عمران اقبال

میں آدمی عام سا۔۔۔ اک قصہ نا تمام سا۔۔۔ نہ لہجہ بے مثال سا۔۔۔ نہ بات میں کمال سا۔۔۔ ہوں دیکھنے میں عام سا۔۔۔ اداسیوں کی شام سا۔۔۔ جیسے اک راز سا۔۔۔ خود سے بے نیاز سا۔۔۔ نہ ماہ جبینوں سے ربط ہے۔۔۔ نہ شہرتوں کا خبط سا۔۔۔ رانجھا، نا قیس ہوں انشا، نا فیض ہوں۔۔۔ میں پیکر اخلاص ہوں۔۔۔ وفا، دعا اور آس ہوں۔۔۔ میں شخص خود شناس ہوں۔۔۔ اب تم ہی کرو فیصلہ۔۔۔ میں آدمی ہوں عام سا۔۔۔ یا پھر بہت ہی “خاص” ہوں۔۔۔ عمران اقبال کی تمام پوسٹیں دیکھیں

23 responses to “سگریٹ نوشی صحت کے لیے مضر ہے۔۔۔

  • ضیاء الحسن خان

    اچھی طرح یاد ہے میٹرک کا آخری پیپر دے کے واپسی پر شغل میں دوستوں کے ساتھ سگریٹ شروع کی اور مسلسل 33 سال کی عمر تک خوب پی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ یہ 2008 مئی کی بات ہے عشاء کی نماز پڑھ رہا تھا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ سلام پھیرا تو جیب میں سگریٹ کی ڈبی پر نظر پڑی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور پتہ نہیں کیسے وہیں بیٹھے بیٹھے فیصلہ کیا کہ آج کے بعد نہیں پی نی تو بس اللہ کا شکر ہے وہ دن اور آج کا دن الحمداللہ سگریٹ چھوٹ گئی جو نقصان ہوا سو ہوا مگر ان شاء اللہ آئندہ نہیں ہوگا اور ایک بات۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    آہستہ آہستہ نہیں چھوٹے گی بس ہمت کر کے اک واری میں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ایک مہینہ کی بات ہے فیر امن سکون اور بڑی ہی راحت ہے۔۔۔۔۔۔۔۔

    اللہ سبکو ہمت دے اس لعنت سے بچنے کی آمین

  • سعد

    میری دعا ہے کہ آپ اس لعنت سے جلد از جلد چھٹکارا پا لیں۔

  • مکی

    چلیں جی اللہ آپ کو کامیاب کرے، کامیاب ہوجائیں تو بتائیے گا ضرور شاید آپ کی نقل کرتے ہوئے میں بھی کامیاب ہوجاؤں..

  • جعفر

    میں نے تو آج تک کسی کو سگریٹ کی وجہ سے مرتے نہیں دیکھا
    یہ جو آپ کو اچانک موٹاپے کا خوف طاری ہونے لگا ہے
    اس کی وجوہات مجھے تو کچھ اور لگ رہی ہیں

    وضاحت : میں سگریٹ سے سخت متنفر ہوں، البتہ نوشی کے خلاف کوئی بات نہیں سن سکتا۔۔۔

  • شاہدہ اکرم

    عِمران اللہ تعالیٰ آپ کو ہِمّت دے اور یہ لعنت کی لت آپ سے چُھوٹ جائے میں اپنے گھر میں دو لوگوں کے ساتھ اِس زہر کا دُکھ دیکھ چُکی ہُوں پلیز جِتنی جلد ہو سکے اِس لعنت سے پیچھا چُھڑائیں اپنا بھی خیال کریں اور اپنے بچوں کا بھی خیال کریں ابھی اِتنی کم عُمر میں ساںسں پُھول جانا بہُت حیرانگی کی بات ہے سوچ لیں کہ یہ سب کیُوں ہو رہا ہے ؟؟؟
    جِتنی آپ کی عُمر ہے اُتنے سال میرے شوہر کو جاب کرتے ہو گئے ہیں لیکِن کِسی بھی قِسم کے معمُولی سے بھی نشے سے دُور رہنے کی وجہ سے ماشاء اللہ اِتنی اچھی صِحت ہے اور ہر وقت واک کو تیار رہتے ہیں ڈاکٹر بھی حیران ہو جاتے ہیں کہ اکرم صاحب ماشاءاللہ جوانوں والا بی پی ہے آپ کا تو ،،،بتانے کا مقصد یہ ہے کہ ہمیں اپنی صِحتوں کا
    خیال خُود ہی رکھنا ہوتا ہے اپنے لِئے بھی اور اپنے پیاروں کے لِئے بھی،،،

  • انکل ٹام

    میرے خیال سے اس میں سگرٹ نوشی کے ساتھ ساتھ مستقل مزاجی کے ساتھ ورزش نہ کرنے کا بھی بہت بڑا ہاتھ ہے ۔

  • شاہدہ اکرم

    جعفر میں نے دیکھا ہے اپنے گھر میں دو لوگوں کو اور بہُت تکلیف دیکھی ہے اُن کی ،،،اور یہ تکلیف صِرف اُن کی نہیں ہوتی پُورا گھر اُن کی اِس تکلیف میں شامِل ہوتا ہے ہم نے دیکھی ہے وُہ تکلیف،،،

  • محمد سعد

    جعفر، واقعی بندہ سگریٹ سے نہیں مرتا بلکہ اس کی وجہ سے ہونے والی بھیانک بیماریوں کی وجہ سے مرتا ہے۔ 😛

  • جاوید گوندل ۔ بآرسیلونا ، اسپین

    اللہ تعالٰی آپ کو اپنے اس نیک ارادے میں کامیاب کرے۔ سخت اور مستقل ارادے کے سامنے سگریٹ چھوڑنا کوئی مشکل کام نہیں۔ آپ اسے کر سکتے ہیں یعنی آپ سگریٹ نوشی چھوڑ سکتے ہیں۔

    جم ضرور جائیں نہائت آہستہ محض دس منٹ سے تک ورزش کی جئیے۔ رفتہ رفتہ اس دورانیے کو بڑھاتے جائیں ایک وقت آئے گا آپ دوسرے لوگوں کی طرح تمام مشینیں نائت آسانی سے کر رہے ہونگے۔ اگرر ممکن ہو تو کسی ٹیوٹر کی نگرانی میں ورزش کریں اور تین یا چار ہفتوں کا پروگرام اور شیدول بنائیں ۔ کہ کونسی مشہین کتنے منٹ ریاض کرنا ہے۔ ا

    شروع میں ایک دم تیز یا سخت ورزش سے جسم میں شکر جل جانے سے پٹھے چرح جاتے ہیں ایک دو دن بعد چلا تک نہیں جاتا۔ یوں نہیں ہونا چاہئیے۔ نہائے معمولی سے ورزش سے آگاز کرین اوت آسان ہو اور سخت نہ ہو۔ اور اسے گھڑی سامنے رکھتے ہوئے چار ھفتوں تک نہایے آہستگی سے بڑھاتے جائیں۔

    ھفتے میں تین سے چار مرتبہ جم جائیں اور ایک بار میں ایک گھنٹے تک کی ورزش تک پہنچیں۔ ۔ پروگرام اور مشینیں بدلتے رہیں۔ اپنے ٹیوٹر کی نگرانی میں ورزش کریں ۔ جم سے لطف اٹھائیں اپنے اوپر سور مت کریں ورنہ آپ بور ہوکر دو تین ھفتوں میں جم سے منہ موڑ لیں گے۔

    عمران بھائی ایک وقت آئے گا آپ خاصے اسمارت اور چاک و چوبند اور پھرتیلے جسم کے مالک ہونے گے۔ اور سگریٹ وغیرہ جیسی لعنےت سے بھی نفرت ہوجانے کی وجہ سے اسے جان چھوٹ جائے گی ۔ یعنی نفسیاتی طور پہ آپ تمباکو نوشی سے الرجک ہو جائیں گے۔

  • یاسرخوامخواہ جاپانی

    او پائی جان
    کمزوری سیگریٹ کی وجہ سے نہیں ہے۔
    اتنا عرصہ تن آسانی سے گذارنے سے ہے۔
    اور ایک دم پہلوان نہ بنئے آہستہ آہستہ ورزش جاری رکھئیں۔
    ایک مہینے بعد سب ٹھیک ہو جائے گا۔
    میں نے بھی ضیاء کی طرح ایک دن ڈبی پھینکی اور بس ۔
    لیکن اب کبھی کبھی دل کرتا ہے تو مہنگی ترین سگریٹ خریدتاہوں۔
    دو چار کش لگا کر باقی ڈبی پھینک دیتا ہوں۔
    بحر حال قوت ارادہ کی ضرورت ہے۔
    سگریٹ پھینک دیں۔۔سمجھیئں آپ نہیں پیتے۔

  • بلاامتیاز

    جب تک آپ سگریٹ پی رہے تھے درست تھا۔ لیکن اب سگریٹ آپ کو پینے لگ گیا ہے۔تو چھوڑ دیجیئے۔۔
    آپ اشیاء کو استعمال کریں نہ کہ اشیاء آپ کو استعمال کریں۔
    فطری سا فارمولہ ہے

  • عدنان شاہد

    السلامُ علیکم عمران بھائی
    اس میں کوئی شک نہیں کہ سگریٹ پینا ایک بری عادت ہے اور یہ لت جس کسی کو ایک بار پڑ جائے دوبارہ چھوٹتی نہیں . لیکن میرے کچھ جاننے والے ہیں جو کہ ایک لمبے عرصے سے اس عادت میں مبتلا ہیں لیکن وہ بالکل چاق و چوبند ہیں اس کی وجہ یہ کہ وہ باقاعدگی سے ایکسر سائز کرتے ہیں بلکہ کچھ تو فٹبال کے اچھے کھلاڑی بھی ہیں.

    لیکن پھر یہ ایک بری عادت ہے جیسے بھی ممکن ہو اس سے جلد از جلد چھٹکارا پا لینا چاہئیے. اور یہ جو بات آپ نے کہی ہے ناں کہ آہستہ آہستہ سگریٹ چھوڑنے والی اس سے کچھ نہیں ہوگا. کیونکہ میں نے بھی شروع میں ایسا ہی کیا تھا لیکن نہیں چھوڑ سکا . پھر میں نے ایک دم سے سموکنگ چھوڑی . شروع میں کچھ دن مسلہ بنا ، کبھی طبیعت بوجھل ہوجاتی تو کبھی ایویں ای چڑ چڑا ہو جاتا لیکن اللہ پاک کا شکر ہے کہ ابھی بالکل سکون ہے. اور میں تو جیب میں رسیلی سپاری یا بھنے ہوئے چنے رکھتا تھا . جب کبھی سگریٹ کی طلب ہوتی تو تھوڑی سی سپاری یا چنے منہ میں رکھ لیتا. لیکن میں آپ کو سپاری کا مشورہ نہیں دوں گا کیونکہ اس سے آپ کو سپاری کی عادت پر جائے گی. آپ ایسا کرو کہ یا تو چنے پاس رکھا کرو یا پھر کھجوریں لو اور جب کبھی تروڑک پڑے تو ایک کھجور میں منہ میں رکھ لیں اور اس کو ٹافی کی طرح چوسنا شروع کردیں ان شاء اللہ سگریٹ کی طلب نہیں ہوگی. لیکن آہستہ آہستہ کم کرنے سے تمباکو نوشی کی عادت نہیں چھوٹے گی اس کو ایک بار ہی چھوڑنے سے اس سے جان چھوٹے گی

  • وقاراعظم

    ہمم، اچھا ارادہ باندھا ہے آپ نے، اللہ آپ کو اس پر ثابت قدم رہنے کی توفیق دے۔ میں نے تو کبھی زندگی میں سگریٹ نہیں پی، ہاں ورزش کرنے سے میری بھی جان نکلتی ہے۔ ویسے تو کراچی میں رہتے ہوئے ٹرانسپورٹ کے دھوئیں اور بسوں میں سفر کرتے ہوئے لوگوں کے سگریٹ کے دھوئیں کے عادی ہو گئے ہیں۔ لیکن پھر بھی مجھے تو بڑا غصہ آتا ہے جب بس میں سفر کے دوران کوئی سگریٹ جلاتا ہے۔ پھر میں اس سے نہایت ادب سے عرض کرتا ہوں کہ جناب سگریٹ بجھا دیں۔ اگر نہ بجھائے تو پھر پھڈّا۔۔۔ 😉

  • افتخار اجمل بھوپال

    کاش آپ ميرے کہيں قريب رہتے ہوتے اور ميں آپ کو جانتا ہوتا ۔ پھر آج آپ سگريٹ نہ پی رہے ہوتے ۔ ميں ميرے بھائی ميرے والد دادا دادا کے بھائی پردادا نانا کسی نے تمباکو نہيں پيا ۔ يہ اللہ کی ہم پر خاص مہربانی رہی ہے ۔ نتيجہ يہ ہے کہ کوئی دور سگريٹ پی رہا ہو تو ہميں خُندق شروع ہو جاتی ہے ۔ جب سے حادثہ ہوا ہے مجھے خوشبو بدبو کا احساس نہيں ہے تو ميں چين ميں ہوں
    آپ نے سگريٹ چھوڑنا ہی ہے تو اس کا ايک ہی طريقہ ہے ۔ايک دم چھوڑ ديجئے ۔ تھرموس ميں چائنيز گرين ٹی بغير چينی بنا کر ساتھ رکھا کريں ۔ جب سگريٹ کی حاجت ہو ايک کپ يا آدھا کپ چائينيز گرين ٹی پی ليجئے ۔ منہ کا ذائقہ درست کرنے کيلئے کبھی کبھی چينی ملا ليجئے ۔ ساتھ ہی جب ذہن فارغ ہو آيت کريمہ کا ورد رکھيئے ۔ اللہ آپ کی مدد فرمائے ۔

  • ا ل م

    ہزار دفعہ کہا لیکن نہیں مانے

    بہت خود غرض ہو عمران

  • درویش خُراسانی

    میں خود تو سیگرٹ نہیں پیتا لیکن بعض اوقات مسجد میں کوئی سیگرٹ پینے والا ساتھ میں کھڑا ہوجاتا ہے تو بس ، سانس لینا مشکل ہوتا ہے۔

    ویسے جو بندے سیگرٹ پیتے ہیں ، انکی گھر والیوں کا کیا حال ہوگا ۔ ظاہر ہے جب میاں کے منہ سے بدبو آتی ہوگی تو بیویوں کا تو اللہ ہی مالک ہے۔ یہ تصور کرتے ہوئے بھی ایک جرجری لیتا ہوں ۔

    ایسے ہی نسوار ڈالنے والے بھی ہونگے ۔ کیسے وہ گندے منہ کے ساتھ اپنے گھر والیوں کے پاس جاتے ہیں۔

    کیونکہ اگر آپکا دوست سیگرٹ پی رہا ہو تو آدمی اس سے دور بیٹھ سکتا ہے لیکن اب بیوی سے تو دور نہیں بیٹھا جاسکتا ۔وہ بے چاری کس اذیت سے پاس بیٹھی ہوگی کہ میرا میاں ہے، اور میاں ہے کہ بس منہ کو گندا کرکے ہی بیوی کے پاس بیٹھتا ہے۔

    جس طرح پیاز کی بدبو مسجد میں منع ہے ایسے ہی سیگرٹ کا بھی حکم ہے۔
    رمضان مین عجیب و غریب حرکات ہوتی ہیں ، جب روزہ افطار کیاجاتا ہے تو سیگرٹ پینے والے حضرات اور نسواری حضرات اگر باتھ روم جائیں تو وہاں بھی سیگرٹ جلا کر حاجت کرتے ہیں۔ یعنی منہ میں بھی گندگی اور نیچے بھی گندگی۔

    ویسے اگر مرغی اور نسواری کو ایک کمرے میں بند کر دیا جائے تو میرے خیال میں مرغی اتنی گندگی نہیں کرے گی جتنی ایک نسواری آدمی۔

    عمران بھائی اللہ تعالیٰ آپکو توفیق دے گا سیگرٹ چھوڑنے کا بس آپ صرف ہمت اور دعاء کریں۔

  • Ahmer

    kia hi acha ho keh aap is post ko alag zumrey men kholen aur cigrate chorney key iqdamat aur mushahidat o tajarbat wahan raqam kertey rahen aur
    doosrey ashab jo cigrate chorna chahtey hen woh bhi us ka aik hissa ban jaien, .
    is key ilawa wahan kar aamad links/url bhi shamil kertey chaley jaien takeh deeger logon ko faida ho
    khas taur per cigrate sey honey waley nuqsanat active smoker aur passive smoker donon key hawaley sey shamil kiy jaien
    is post ko post na rehney den balkeh aik muhim ki terah is per kam karen,

    waisey muazrat key sath, mera mushahia hey keh cigrate
    peeney wala cigrate chorney ka sirf irada kerta hey chorta nahin yahan tak keh…………………………………… pehla dil ko dora per jaey
    yar cancer ho jaey

  • عمران اقبال

    @ ضیا بھائی، بس آپ جیسی ہی ہمت چاہیے… کام مشکل ہے… لیکن ارادہ سخت ہے اس دفعہ… انشاءاللہ جلد ہی اس لعنت سے چھٹکارا حاصل کر لوں گا…

    @ سعد… دعا کے لیے شکریہ میرے دوست…

    @ مکی صاحب… آپ بھی جانتے ہی ہیں کہ یہ کمبخت کتنی فضول چیز ہے… تو چھوڑ ہی ڈالیں… میرے انتظار میں مت رہیے گا… 🙂

    @ جعفر بھائی… سگریٹ سے کوئی نہیں مرتا… سگریٹ نوشی کے نقصانات سے ضرور مرتا ہے… موٹا پا کسرت نا کرنے کی وجہ ہے… اور ہاں… میں اتنا موٹا نہیں جتنا سمجھ رہیں ہیں… بس ہلکی سی توند نکلی ہے… وہ بھی انشاءاللہ ایک آدھ ماہ میں کنٹرول ہو جائے گی…

    @ جاوید بھائی… آپ کے مشورے پر عمل کر رہا ہوں… اور بہت فرق بھی محسوس ہو رہا ہے… الحمدللہ

    @ شاہدہ آپا… اللہ اکرم صاحب کو صحت مند اور تندرست رکھے… اپنی دعاووں میں اپنے اس چھوٹے بھائی کو یاد رکھیے گا…. شکریہ…

    @ یاسر بھائی… بس ڈبی پھینکنے کی ہی کسر رہ گئی ہے… جلد ہی پھینک دی جائے گی… انشاءاللہ

    @ امتیاز بھائی… آپ نے بلکل درست فرمایا… یہ ہماری کمزوری ہی ہے کہ ہم اشیاء کو خود پر حاوی کر دیتے ہیں… اور یہیں سے نقصان شروع ہوتا ہے…

    @ عدنان شاہد صاحب… میرے بلاگ پر خوش آمدید… آپ کا تبصرہ پڑھ کر بہت خوشی ہوئی کہ آپ نے وقت نکالا اور اس اہم موضوع پر اپنے خیالات سے آگاہ کیا… آپ کے مشورے بہت کارآمد ہیں اور ان پر عمل کرنے کی میں پوری کوشش کروں گا… امید ہے کہ آپ اسی طرح اپنی رائے سے آراستہ کرتے رہیں گے…

    @ وقار بھائی… یہ بھی حقیقت ہے… کہ سموکر اگر خود سگریٹ نا پی رہا ہو تو اسے دوسرے کا پینا اور دھویں کی بو بلکل اچھی نہیں لگتی… اللہ کا شکر ہے کہ آپ اس برائی سے بچے ہوئے ہیں… اللہ آپ کو اس کا اجر دے گا… لیکن پھڈے والی بات ٹھیک نہیں…. سموکر بھی تو کسی قسم کے انسان ہی ہوتے ہیں نا… 🙂

    @ افتخار انکل… کاش میں آپ کے ساتھ ہوتا… تو بلاشبہ اس لعنت کو ہاتھ نا لگاتا جس پر آج میں پچھتا رہا ہوں…

    @ ا ل م… ہر انسان خود غرض ہوتا ہے.. میں بھی ہوں… لیکن آپ کی خواہش بھی کسی نا کسی صورت میں پوری تو ہو ہی رہی ہے نا…

    @ درویش خراسانی صاحب… اللہ کے فضل و کرم سے اتنی عقل تو عطا ہے مجھے کہ میں جب بھی مسجد جاتا ہوں تو وضو سے پہلے پیسٹ لازم کرتا ہوں… اور کپڑوں پر بھی عطر یا پرفیوم چھڑک لیتا ہوں تاکہ اللہ کے حضور صاف ستھرا پیش ہوں… جہاں تک بات ہے کہ بیگم کے ساتھ بیٹھنے کی… تو درست فرمایا آپ نے… لیکن جب سے میری بیٹی پیدا ہوئی ہے…. میں بیٹی کے سامنے یا قریب سگریٹ نہیں پیتا… اور جب بھی اسے پکڑتا ہوں تو کوشش یہی ہوتی ہے کہ مجھ سے کوئی بو نا آئے… سگریٹ کی بو میں خود بھی سخت نا پسند کرتا ہوں… اور آپ کی باقی باتوں کا جواب دینے کی مجھ میں ہمت نہیں ہے… آپ کی دعاووں کا بہت بہت شکریہ…

    @ احمر صاحب… بلاگ پر خوش آمدید… اچھا لگا آپ کا مفصل تبصرہ پڑھ کر… آپ کی رائے سے بھی متفق ہوں… لیکن اس پر عمل تب تک نہیں کر پاوں گا جب تک اس لعنت سے ہمیشہ ہمیشہ کے لیے جان نا چھڑا لوں… انشاءاللہ "تمباکو نوشی کے خلاف تحریک” جلد ہی شروع کروںگا…

    ضیاءالحق کے بارے میں ایک لطیفہ پڑھا تھا کہ وہ کہا کرتے تھے کہ "سگریٹ چھوڑنا کونسا مشکل کام ہے… میں کئی بار چھوڑ چکا ہوں”…

    یہ بھی حقیقت ہے کہ سگریٹ نوشی اب میرے لیے اور مجھ جیسے کئی چین سموکرز کے لیے مزا نہیں مجبوری بن گئی ہے… اور اس مجبوری کو خود سے دور کرنے میں جو تھوڑی بہت ہمت چاہیے بس ہم اس سے ڈرتے ہیں… جس دن یہ خوف نکل گیا تو سگریٹ دور پھینک دیں گے…

    وزن بڑھنے کی سب سے بڑی وجہ کاہلی ہے… جو انکل ٹام نے بھی اپنے تبصرے میں بیان کی ہے… اور یہ کاہلی اپنا زور تب پکڑتی ہے جب انسان محسوس کرتا ہے کہ وہ جو بھی کر لے، جسم کے اندر کی کمزوری اسے کچھ نہیں کرنے دیتی… اور یہ کمزوری بلاشبہ سگریٹ نوشی کے ہی باعث ہوتی ہے…

    آپ سب کی نیک تمناوں اور دعاووں کا بہت بہت شکریہ…

  • خرم ابن شبیر

    عمران بھائی اگر سگریٹ چھوڑنے ہیں تو ایک دم ہی چھوڑیں یہ منصوبہ بندی سے کبھی نہیں چھوڑ سکیں گے۔ میرے ماموں روز کی دو ڈبیہ ختم کرتے تھے۔ ایک دن انھوں نے سب کے سامنے فیصلہ کیا کہ آج کے بعد سگریٹ نہیں پیوں گا اور پھر اس دن کے بعد میں نے کبھی بھی ان کے ہاتھ میں سگریٹ نہیں دیکھے
    آپ بھی ہمت کریں اور ایک دم ہی چھوڑ دیں انشاءاللہ جب عظم کیا ہے تو کامیاب بھی ہو جائیں گے انشاءاللہ

  • Clone of Mirza Ghulam Ahmed Qadiyani

    you can quit it whenever u want.
    @Khurasani
    ?Why not to try flavoured cigarettes
    @Yasir Japani
    Yar phenk kun dety ho? baqi dabi mujy bhej dia kro? I like expensive ones. But here in Pakistan we have the blessing of buying only one cigarette. Plus there are packs of SINGLE cigars and cigarettes that are available in market. try them 😛 8) 😆 =]

  • Clone of Mirza Ghulam Ahmed Qadiyani

    You can try electronic cigarettes. they are nicotine free. You can get the desired amount of nicotine in them.

  • عبدالقیوم غوری

    سیگریٹ نوشی کے بارے میں بہت متضاد معلومات بیان کی جاتی ہیں۔ میری ذاتی رائے کے مطابق سیگریٹ نوشی ایک معاشرتی جرم ہے۔ کیونکہ اس قبیح فعل سے ناصرف قیمتی سرمایہ ضائع ہوتا ہے بلکہ صحت پر بھی بہت برا اثر پڑتا ہے۔

    سگریٹ میں موجود 4 ہزار اقسام کے زہریلے کیمیکل شامل ہوتے ہیں۔

    موت اور سیگریٹ نوشی میں بہت قرابت داری ہے اس لئے کبھی بھی خصارے کا سودا نہیں کرنا چاہیے۔

    میں نے بہت زمانہ اس علت کی غلامی کی مگر اب اللہ کے فضل سے اس سے کنارا کشی اختیار کرلی ہے۔

    اللہ ہمارا حامی و ناصر ہو۔

    آمین۔

    ایک پاکستانی: عبدالقیوم غوری۔

  • عبدالقیوم غوری

    سیگریٹ نوشی بری عادت نہیں ہے بلکہ سیگریٹ کا کاروبار کرنا اور اسے استعمال کرنا دونوں جرم ہیں۔
    اگر آپ اس دلدل میں پھنسے ہوئے ہیں تو سنجیدگی سے سوچئے کہ کیسے جان چھٹےگی؟

    میں نے بہت عرصہ سیگریٹ کی غلامی کی ہے اور اب اس کے چنگل سے کامیاب باہر نکل آیا ہوں۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ بقیہ زندگی آسودہ ہو، رابطے میں رہیے۔

    والسلام

    غوری
    gaqayum@hotmail.com

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: